ہوم / امریکا سے / ٹرمپ نے خشوگی رپورٹ پر کانگریس کی دی ہوئی ڈیڈ لائن مسترد کر دی

ٹرمپ نے خشوگی رپورٹ پر کانگریس کی دی ہوئی ڈیڈ لائن مسترد کر دی

واشنگٹن: صدر ٹرمپ نے قانون سازوں کی جانب سے خشوگی کے اندوہناک قتل میں سعودی ولی عہد کے ملوث ہونے کے بارے میں واضح امریکی مو¿قف کے مطالبے کو مسترد کرتے ہوئے کانگریس کو جمال خشوگی کے قاتلوں کا تعین کرنے والی رپورٹ مہیا کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ مسٹر ٹرمپ نے بڑے موثر انداز میں قانون کی متعین کردہ ڈیڈلائن کو اپنی انتظامیہ کی اس دلیل کے تحت بائی پاس کیا ہے کہ کانگریس صدر پر اپنی مرضی نہیں ٹھونس سکتی۔ناقدین نے الزام لگایا کہ وہ امریکہ میں رہائش پذیر واشنگٹن پوسٹ کے کالم نگار خشوگی کے قتل میں سعودی سازش کے عنصر کو دبانا چاہتے ہیں۔ٹرمپ ایڈمنسٹریشن کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ سابقہ ایڈمنسٹریشن کے مو¿قف کے مطابق اور آئین میں الگ الگ کیے گئے اختیارات کی روشنی میں صدر کو یہ صوابدید حاصل ہے کہ وہ جب ضروری سمجھے کانگریس کی کسی کمیٹی کی درخواستوں کو مسترد کر سکتا ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ ایڈمنسٹریشن نے قاتلوں کے خلاف ایکشن لے لیا ہے اور وہ اس حوالے سے کانگریس کے ساتھ بھی مشورہ کرے گی۔ڈیموکریٹس کا کہنا ہے کہ مسٹر ٹرمپ ایک قانون کی خلاف ورزی کر رہے ہیں جسے میگنٹسکی ایکٹ کہا جاتا ہے۔ یہ قانون صدر کو پابند کرتا ہے کہ وہ کمیٹی رہنماو¿ں کی طرف سے جمع کرائی گئی درخواست کا 120 دن کے اندر جواب دے۔سینیٹر باب کورکر سمیت ٹینیسی کے ریپبلیکنز اور سینیٹ کی فارن ریلیشنز کمیٹی کے چیئرمین کی طرف سے جمع کرائی گئی درخواست کی مدت جمعے کے روز ختم ہو چکی ہے۔ سینیٹر رابرٹ مینینڈز کے ایک ترجمان نیو جرسی کے جان پیکان نے کہا ہے کہ "قانون بالکل واضح ہے، ہمارے بھیجے ہوئے خط پر ردعمل کے لیے صرف ارادے اور جوابی رپورٹ کی ضرورت ہے، صدر کو اس معاملے میں کوئی امتیاز حاصل نہیں ہے وہ یاتو قانون پر عمل کریں یا پھر اسے توڑ دیں”۔ ٹرمپ انتظامیہ نے خشوگی کے قتل میں ملوث سعودی عرب کے 17 شہریوں پر نومبر میں ہی پابندیاں عائد کر دی تھیں لیکن سی آئی اے کے اس نتیجے پر پہنچنے کے باوجود کہ اس قتل کا حکم انھوں نے ہی دیا تھا اپنے اہم اتحادی اور عملی طور پر سعودی عرب کے حکمران ولی عہد محمد بن سلمان کو ملزم قرار دینے سے گریز کر رہی ہے۔

Check Also

آصف زرداری کے فرنٹ مین ٹرمپ کے فرنٹ مین بنکر مشکلات کا سبب بن گئے

امریکہ کے وفاقی سراغ رساں ادارے کے اراکین کی نظریں سرمایہ کار عماد زبیری کے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے