fwdopenmosqueday

اسلامک فاﺅنڈیشن آف لبرٹی ول نے تمام مذاہب کےلئے اپنے دروازے کھول دئےے

نیویارک گزشتہ ہفتے کے دن شام تین بجے سے پانچ بجے تک اسلامک فاﺅنڈیشن آف نارتھ جیسے لبرٹی ول کی مسجد بھی کہا جاتا ے اپنے تمام پڑوسیوں خواہ وہ کسی بھی مذہب یا فرقے سے تعلق رکھتے ہوں اپنے دروازے کھول دئیے گزشتہ سال بھی مسجد کی انتظامیہ نے اسی طرح کا پروگرام ترتیب دیا تھا جسے بہت شاندار کامیابی ملی تھی اس سال بھی پروگرام پچھلے سال کے مقابلے میں بہتر تھا۔ اس سال 250 افراد نے شرکت کی۔ مسجد کمیٹی کے چیئرمین ڈاکٹر امین ندیم جو پیشے کے لحاظ سے ڈاکٹر ہیں کافی عرصے سے مسجد کی خدمت کررہے ہیں اخباری نمائندوں سے باتیں کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے لئے بہت اچھا موقع ہے کہ ہم اپنے پڑوسیوں کو جانیں انکے دل میں جو خدشات ہیں دور کریں۔ مسجد کے صدر وسیم افتخار نے اس موقع پر اخباری نمائندوں سے باتیں کرتے ہوئے کہا کہ یہ ہمارے لئے بہت اچھا دن ہے ہم اپنے ہمسایوں کے ساتھ مل بیٹھ کر ایک دوسرے کے خیالات جانیں گے اور اچھے امریکیوں کا رول ادا کریں گے۔مسجد کے امام اطفر نے خوبصورت آواز میں تلاوت کلام پاک سے پروگرام کا آغاز کیا اسکے بعد اسلامک فاﺅنڈیشن کے صدر وسیم افتخار نے خطبہ استقبالیہ دیا اور تمام مہمانوں کی آمد پر ان کا شکریہ ادا کیا اسکے بعد گین پیس کے ڈائریکٹر سبیل احمد نے اسلام کے بارے میں ایک تعارف پیش کیا اور ساتھ ہی ساتھ تمام دوسرے مذاہب اور اسلام کے بارے میں مشترکہ خیالات کو اجاگر کیا۔ ڈاکٹر سبیل احمد دعوت اسلام کے حوالے سے پوری دنیا میں مشہور ہیں ایک پینل میں شامل ہو کر جو تین افراد پر مشتمل تھا جس میں محترمہ ہلینہ اور مسجد کے امام اظفر شامل تھے شرکاءکے سوالوں کے جوابات دئیے جس میں خواتین کے پردے کے متعلق شیعہ سنی عقائد کے فرق اور دہشت گردی کے متعلق سوالات کے جواب دئیے اور مہمان اور شرکاءحضرات ان جوابوں سے کافی حد تک محظوظ ہوئے درمیان میں مہمانوں کو کھانے کا وقفہ دیا گیا جس میں پاکستانی اور عربی کھانے نمایاں تھے۔ قانون نافذ کرنے والے اداروں نے بھی شرکت کی جس میں مارکCurran نمایاں تھے۔ آخر میں مسجد کے صدر وسیم افتخار نے تمام مہمانوں کا شکریہ ادا کیا اور مزید کہا کہ ہم اپنے پڑوسیوں کو دوبارہ بلائیں گے اور ہم بھی انکے پاس جانے کیلئے تیار ہیں تاکہ بھائی چارے کی فضاءقائم رہے۔آخر میں تمام مہمانوں کو مسجد کا دورہ کرایا گیا اور نماز عصر کا مشاہدہ بھی کرایا گیا۔




Leave a Reply