5سال گزر گئے، مہدی حسن کی یادگار نہ بن سکی

 لاہور: 

شہنشاہ غزل مہدی حسن کی وفات کے پانچ سال بعد بھی سندھ حکومت کی جانب سے یادگار بنانے کے انتظامات کوحتمی شکل نہ دی جا سکی۔

سندھ حکومت کی اعلیٰ قیادت اوراہم سیاسی رہنمائوں نے متعدد بار شنہشاہ غزل کی قبرکو یادگار میں تبدیل کرنے کے لیے بیانات جاری کیے ، جب کہ اس سلسلہ میں فنڈز بھی جاری ہوئے، مگراتنا وقت گزرنے کے باوجود اس پروجیکٹ کومکمل نہیں کیا جاسکا۔

اس سلسلے میں مہدی حسن کے داماد حنیف مہدی نے ’’ایکسپریس‘‘ کوبتایا کہ سابق گورنر سندھ ڈاکٹرعشرت العباد، وزیراعلیٰ قائم علی شاہ سمیت صوبائی وزراء اورسیاستدانوں نے ہمیں یقین دہانی کروائی تھی کہ شہنشاہ غزل کی قبر کویادگار میں تبدیل کیا جائے گا۔ اس کے لیے کچھ سرکاری ڈیپارٹمنٹس کوذمہ داری سونپی گئی لیکن ہمارے متعدد بار رابطہ کرنے کے باوجود کچھ نہیں ہوسکا۔ اس وقت شہنشاہ غزل کودنیا سے رخصت ہوئے پانچ برس بیت چکے ہیں لیکن اس حوالے سے کوئی مثبت عمل درآمد نہ ہوسکا۔ ہم نے اپنی مدد آپ کے تحت کراچی کے شاہ احمد قبرستان جوکہ شادمان ٹاؤن، نارتھ کراچی میں واقع ہے، پرقبر کے گرد چاردیواری کروادی ہے لیکن حکومت کی طرف سے کوئی پیش رفت دیکھنے میں نہ آئی۔




Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *