امریکی اٹارنی جنرل صدارتی انتخاب میں روسی مداخلت کی تحقیقات سے الگ ہوگئے

754295-sessionsx-1488522483-173-640x480واشنگٹن ڈی سی: امریکی اٹارنی جنرل جیف سیشنز نے کہا ہےکہ ان کے روسی سفارتکار سے رابطوں کوغلط رنگ دیا جا رہا ہے اور وہ صدارتی انتخابات میں مبینہ روسی مداخلت کی تحقیقات کرنے والی کمیٹی میں بھی شامل نہیں ہوں گے۔
صدر ٹرمپ اور ان کی کابینہ کے اراکین کے روس سے رابطوں کا معاملہ ہر گزرتے دن کے ساتھ پیچیدہ ہوتا جا رہا ہے۔ امریکا میں قومی سلامتی کے مشیر مائیکل فلن کے بعد اٹارنی جنرل جیف سیشنز پر بھی روس کے ساتھ روابط رکھنے پرشدید تنقید کی جا رہی ہے۔
جیف سیشنز نے ٹرمپ کی الیکشن مہم کے دوران دو مرتبہ امریکا میں تعینات روسی سفیر سے ملاقاتیں کیں تاہم انہوں نے عہدہ سنبھالنے سے پہلے یہ بات سینیٹ کو نہیں بتائی۔ واشنگٹن پوسٹ میں یہ خبر شائع ہونے کے بعد سیشنز ان ملاقاتوں سے انکار کرتے رہے تاہم بعد میں انہوں نے ان ملاقاتوں کا اقرار تو کرلیا لیکن ان ملاقاتوں کو نجی قرار دیا۔




Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *