مہنگا ڈیٹا پلان انٹرنیٹ کے فروغ میں رکاوٹ قرار

 

767127-InternetWeb-1489696989-738-640x480ملک میں ڈیجیٹل تقسیم ختم کرنے کیلیے جی ایس ایم اے نے آئندہ بجٹ کیلیے حکومت پاکستان کو متعدد اقدامات تجویز کیے ہیں جو اسے وژن 2025 کے اہداف حاصل کرنے میں مددگار ثابت ہوسکتے ہیں۔

جی ایس ایم اے انٹیلی جنس کی جانب سے شائع کردہ اور ڈیلوئٹ سے تصدیق شدہ وہائٹ پیپر بھی پیش کیا جس میں یہ بات واضح کی گئی ہے کہ ملکی آبادی کے محض 47 فیصد لوگوں کے پاس موبائل سروس کی سبسکرپشن موجود ہے اور ان میں صرف 10 فیصد کے پاس 3G یا 4G ڈیٹا سروسز کی سبسکرپشن موجود ہے۔

دوسری جانب وژن 2025 میں درج حکومتی ارادوں کے باوجود اندازہ لگایا گیا ہے کہ 2020 تک ملک میں موبائل استعمال کرنے والوں کی تعداد میں صرف 5 فیصد اضافہ ہو سکے گا تاہم زیادہ تشویش کی بات یہ ہے کہ ملک میں 99 فیصد لوگ انٹرنیٹ تک رسائی کیلیے موبائل فون پر بھروسہ کرتے ہیں لیکن امکان ہے کہ 2020 تک 48 فیصد پاکستانی شہری موبائل سبسکرپشن سے محروم ہوں گے۔ اس کی ایک اہم وجہ موبائل سروس کا مہنگا ہونا ہے۔




Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *