واجبات ادائیگی کی ضمانت مانگنے والی آئی پی پیز تصفیے کیلیے طلب

763537-PakCurrencyWeb-1489376684-997-640x480کراچی: حکومت سے 48 ارب سے زائد کی ادائیگی کے لیے ضمانت طلب کرنے والے جن 13 انڈی پینڈنٹ پاور پروڈیوسرز (آئی پی پیز) نے حکومت کو نوٹس دیے تھے ان کمپنیوں کو پی پی آئی بی اسلام آباد دفتر میں مسئلے کے حل کے لیے مدعو کیا گیا ہے۔
پی پی آئی بی ذرائع کے مطابق حکومت نے 50 پاور پروڈیوسروں کے لیے 30 ارب روپے جاری کیے ہیں جو حکومت کے ذمے 444 ارب روپے کے واجبات کا حصہ ہیں۔ یہ بات قابل ذکر ہے کہ ان 13 پاور کمپنیوں کو 30 ارب روپے میں سے صرف 13.440ارب روپے دیے گئے ہیں حالانکہ ان کمپنیوں نے حکومت کو 48 ارب روپے ادائیگی کا نوٹس دیا تھا۔
واضح رہے ک ہ1994 کی پاور پالیسی کے تحت قائم 15 آئی پی پیز کو 12.842ارب روپے جاری کیے گئے ہیں حالانکہ کہ ان کے واجبات کا حجم بہت زیادہ ہے۔ ان میں سے 3 آئی پی پیز نے حکومت سے ضمانت طلب کرلی تھی انہیں مجموعی طور پر 3.122ارب روپے دیے گئے جس سے اس بات کی نشاندہی ہوتی ہے کہ حکومت کو نادہندگی کے مسئلے کی کوئی پرواہ نہیں ہے اور وہ نادہندگی سے بچنے کے لیے کوئی انتظام نہیں کررہی ہے۔




Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *