783850-medicine-1491339908-261-640x480

فارما سیکٹر؛ مزید100خام اشیا پر5 فیصد ڈیوٹی کی سہولت زیر غور

 اسلام آباد: 

وفاقی حکومت کی جانب سے آئندہ مالی سال 2017-18کے وفاقی بجٹ میں فارماسیوٹیکل انڈسٹری کے لیے 5 فیصد رعایتی ڈیوٹی پرخام مال کی درآمدی لسٹ میں توسیع کرنے سمیت دیگر سہولتیں دیے جانے کا امکان ہے۔

اس ضمن میں ’’ایکسپریس‘‘  کو دستیاب دستاویز کے مطابق  فیڈرل بورڈ آف ریونیو(ایف بی آر) کی جانب سے آئندہ مالی سال کے وفاقی بجٹ میں مقامی سطح پر  ادویہ تیار کرنے والی  ادویہ ساز کمپنیوں کیلیے خام مال کی درآمد پر 5 فیصد رعایتی ڈیوٹی کی سہولت دینے کیلیے مزید 100 کے لگ بھگ خام مال  کے طور پر استعمال ہونیوالی اشیا کو پاکستان کسٹمز ٹیرف کے پانچویں شیڈول کے پارٹ ٹو میں شامل کرنے کی تجویز کا جائزہ لینا شروع کردیا ہے تاکہ ملک میں مقامی سطح پر تیار ہونے والی اشیا کی پیداواری لاگت میں کمی واقع ہوسکے اور ادویہ کی قیمتوں میں کمی واقع ہوسکے۔

دستاویز میں مزید بتایا گیا ہے کہ اس کے علاوہ آئندہ مالی سال کے وفاقی بجٹ میں حکومت کی جانب سے جن ادویہ کی قیمتوں کا تعین کیا جاتا ہے، ان ادویہ کی مقامی سپلائی پرصفر سیلز ٹیکس کی سہولت دینے  کی تجویز کا بھی جائزہ لیا جارہا ہے۔ دستاویز میں مزید بتایا گیا ہے کہ مقامی سطع پر تیار ہونیوالی جن ادویہ کی قیمتوں کا تعین وفاقی حکومت کرتی ہے ان ادویہ کیلیے پیکنگ میٹریل سمیت دیگر دیگر اشیا پر ادا کردہ ٹیکس کی ایڈجسٹمنٹ کیلیے ان پٹ ٹیکس کریڈٹ کلیم کرنے کی اجازت دیے جانے کا بھی امکان ہے۔




Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *