781972-Economy-1491188858-527-640x480

چین سے پاور مشینری درآمد کے ڈیٹا کا فرق 3 ارب ڈالر پر پہنچ گیا

کراچی: 

اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے اعتراف کیا ہے کہ پاکستان میں ہونیوالی چینی سرمایہ کاری اور چین سے موصول ہونے والے قرضوں کی پاکستان کے توازن ادائیگی کے اعدادوشمار میں درست عکاسی نہیں ہورہی۔

پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے کیلیے بجلی پیدا کرنیوالی مشینری کی بڑے پیمانے پر درآمدات کی وجہ سے اسٹیٹ بینک آف پاکستان اور وفاقی ادارہ شماریات کے درآمدات سے متعلق اعدادوشمار میں فرق 3ارب ڈالر کی بلند ترین سطح تک پہنچ گیا ہے۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق اس فرق سے ظاہر ہوتا ہے کہ سی پیک منصوبوں سے متعلق مشینری کی درآمدات کے بڑے حصے کی فنانسنگ پاکستانی بینکنگ انڈسٹری سے نہیں کی جارہی بلکہ اس کیلیے پاکستانی بینکاری سے باہر کے ذرائع استعمال ہورہے ہیں۔ اس خیال کو انٹربینک مارکیٹ پر کسی بڑے دباؤ کی عدم موجودگی سے بھی مزید تقویت ملتی ہے۔




Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *