ویلیو ایڈڈ ٹیکسٹائل برآمدات 1 ماہ میں 68 فیصد بڑھ گئیں

803739-germantextile-1493265468-144-640x480ملک میں بجلی و گیس کی لوڈشیڈنگ اورزائد ٹیرف کے باوجود مارچ 2017 کے دوران ویلیو ایڈڈ ٹیکسٹائل مصنوعات کی برآمدات میں فروری 2017 کی نسبت 68.63 فیصد کا خوش کن اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے جبکہ مارچ 2016 کی نسبت مارچ 2017 میں6.11 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔
ویلیوایڈڈ ٹیکسٹائل انڈسٹری کے نمائندوں کا کہنا ہے کہ ملکی برآمدات میں اضافہ 16 جنوری2017 سے موثربہ عمل ہونے والے وزیراعظم کے اعلان کردہ پیکیج کے مرہون منت ہے اور وزیراعظم کے اعلان کے مطابق ’’ڈیوٹی ڈرابیک آف ٹیکسز آرڈر2016-17‘‘ پرعمل درآمد کے مثبت اثرات مارچ2017 میں مرتب ہوئے ہیں۔ مارچ2017 کے دوران پاکستان سے یورپ سمیت دنیا کے دیگر ممالک کو 10 لاکھ 62 ہزار 424 ڈالر مالیت کی ویلیوایڈڈ ٹیکسٹائل مصنوعات کی برآمدات ہوئیں جبکہ مارچ 2016 میں 10 لاکھ1 ہزار 284 ڈالر مالیت اور فروری2017 میں 9 لاکھ 93 ہزار761 ڈالرمالیت کی برآمدات ہوئیں۔
اعدادوشمار کے مطابق مارچ2017 میں ویلیوایڈڈ ٹیکسٹائل سیکٹر کی برآمدات میں سب سے زیادہ اضافہ ٹینٹ اینڈ کینوس میں ہوا جس کی برآمدات مارچ2016 کی نسبت71.81 فیصد کے اضافے سے7 ہزار886 ڈالر رہیں۔ ریڈی میڈ گارمنٹس کی برآمدات 19.53 فیصد اضافے سے 2 لاکھ 4 ہزار 933 ڈالر، میڈاپس کی برآمدات 12.44 فیصد اضافے سے58 ہزار487 ڈالر، ٹاولز کی برآمدات15.78 فیصد کے اضافے سے70 ہزار 354 ڈالر، نٹ ویئرکی برآمدات 5.44 فیصد اضافے سے1 لاکھ84 ہزار521 ڈالر، بیڈ ویئرکی برآمدات 5.43 فیصد اضافے سے1 لاکھ 80 ہزار 482 ڈالر، کاٹن یارن کی برآمدات 5 فیصد اضافے سے 97 ہزار 421 ڈالر اور آرٹ اینڈ سلک سینتھیٹک ٹیکسٹائل کی برآمدات2.78 فیصد اضافے سے24 ہزار 116 ڈالر رہی ہے۔




Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *