807826-FBRnew-1493697802-319-640x480

ٹیکس چھوٹ ختم کیے جانے کے باوجود امپورٹرز کو 118 ارب کا فائدہ

807826-FBRnew-1493697802-319-640x480وفاقی حکومت نے جانب سے 250 ارب روپے سے زائد مالیت کی ٹیکس چھوٹ ختم کرنے کے باوجود ایف بی آر کی طرف سے ٹیکس دہندگان کورواں مالی سال 2017-18 کے دوران درآمدی سطح پر مجموعی طور پر 118ارب روپے سے زائد کی ٹیکس چھوٹ دیے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔
چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو ڈاکٹر ارشاد نے ماتحت اداروں کو درآمدی سطح پر دی جانے والی اربوں روپے کی ٹیکس چھوٹ کی ترجیحی بنیادوں پر انکوائری کرکے کارروائی کرنے کی ہدایات جاری کردی ہیں۔ اس ضمن میں ’’ایکسپریس‘‘ کو دستیاب دستاویز کے مطابق یہ انکشاف گزشتہ ہفتے چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کی زیر صدارت ہونے والی تمام ماتحت اداروں کے افسران کی ویڈیو کانفرنس کے دوران ہوا ہے۔
ایکسپریس کو دستیاب دستاویز کے مطابق ویڈیو کانفرنس میں بتایا گیا ہے کہ رواں مالی سال 2017-18کے پہلے 9 ماہ کے دوران درآمدی سطح پر کمرشل امپورٹرز اور مینوفیکچررز کی جانب سے وی باک بلٹ ان خود کار نظام کے تحت مجموعی طور پر ایک کھرب 18 ارب 79کروڑ روپے مالیت کی ٹیکسوں میں چھوٹ حاصل کی گئی ہے۔




Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *