814284-cric-1494772663-386-640x480

پاکستان ڈومینیکا ٹیسٹ جیتنے کے لئے 6 وکٹ دوری پر

ویسٹ انڈیز کو ڈومینیکا ٹیسٹ جیتنے کے لئے 304 رنز کا ہدف ملا جب کہ پاکستان کو تیسرا ٹیسٹ اپنے نام کرنے کے لئے 6 وکٹیں درکار ہیں۔
ڈومینیکا میں جاری تیسرے اور فیصلہ کن ٹیسٹ میچ کے آخری روز ویسٹ انڈیز نے 7 رنز ایک کھلاڑی آؤٹ سے اپنی نامکمل اننگز کا آغاز کیا تو بریتھ ویٹ 3 رنز کے ساتھ کریز پر موجود تھے لیکن وہ زیادہ دیر کریز پر ٹہھر سکے اور 6 رنز بنانے کے بعد 22 کے مجموعی اسکور پر یاسر شاہ کا شکار بن گئے۔ تیسری وکٹ پر شیمرون ہتمیر اور شائی ہوپ نے محتاط انداز میں کھیلتے ہوئے 25 رنز کی شراکت قائم کی اور ٹیم کا مجموعی اسکور 47 تک پہنچا تو شمرون 25 رنز بنا کر محمد عامر کی گیند پر بولڈ ہوگئے جب کہ شائی ہوپ 17 رنز بناسکے۔ کھانے کے وقفے تک میزبان ٹیم نے 4 وکٹوں کے نقصان پر 73 رنز بنالئے جب کہ پاکستان کو ٹیسٹ میچ جیتنے کے لئے مزید 6 وکٹیں درکار ہیں۔
دوسری اننگز میں پاکستان کی بیٹنگ لائن بری طرح ناکام ہوئی، اوپننگ بلے باز اور مڈل آرڈر کی جانب سے مایوس کن کارکردگی پیش کی گئی تاہم محمد عامر اور یاسر شاہ کی 61 رنز کی شراکت نے اننگز میں جان ڈالی اور قومی ٹیم نے 8 وکٹوں کے نقصان پر 174 رنز پر اننگز ڈکلئیر کی جس کے بعد میزبان ٹیم کو جیت کے لئے 304 رنز کا ہدف ملا۔ پاکستان کی جانب سے یاسر شاہ نے شاندار بیٹنگ کرتے ہوئے 38 رنز کی ناٹ آؤٹ اننگز کھیلی جب کہ حسن علی نے بھی 15 رنز بنائے اور آؤٹ نہیں ہوئے۔ گرین کیپس کی جانب سے ابتدائی 7 بلے باز محض 95 کے مجموعی اسکور پر پویلین لوٹ گئے تھے۔ کیرئیر کا آخری ٹیسٹ کھیلنے والے کپتان مصباح الحق اور مایہ ناز بلے باز یونس خان بالترتیب 2 اور 35 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے جب کہ اظہرعلی 3، شان مسعود 21 اور بابراعظم ایک مرتبہ پھر ناکام رہے اور کھاتہ کھولے بغیر پویلین لوٹے۔ وکٹ کیپبر بلے باز سرفراز احمد کی اننگز کا خاتمہ 4 اور اسد شفیق 13 رنز کے مہمان بنے جب کہ محمد عامر نے شاندار 27 رنز بنائے۔ ویسٹ انڈیز کی جانب سے الزیری جوزیف نے 3، شینن گیبرئیل اور دوندرا بشو نے 2،2 جب کہ روسٹن چیز نے ایک وکٹ حاصل کی۔




Leave a Reply