874382-moody-1499889315-394-640x480

موڈیز کا پاکستان کی بی 3 ریٹنگ برقرار رکھنے کا اعلان

 کراچی: موڈیز انٹرنیشنل سروسز نے چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے کے باعث انفرااسٹرکچر مسائل کے حل کی امید پر پاکستان کی بی تھری (B3) ریٹنگ برقرار رکھنے کا اعلان کیا ہے جس کا آؤٹ لک بھی مستحکم رکھا گیا ہے۔

گزشتہ روز جاری کردہ بیان میں بین الاقوامی ریٹنگ فرم نے کہاکہ پاکستانی ریٹنگ برقرار رکھنے کا فیصلہ کریڈٹ سپورٹ اور رکاوٹی عناصر کو متوازن کرتا ہے، پاکستان کا وسط مدتی گروتھ آؤٹ لک ٹھوس ہے جس کو چین پاکستان اقتصادی راہداریاور آئی ایم ایف کے ایکسٹینڈڈفنڈ فیسلیٹی (ای ایف ایف) پروگرام 2013-16 کے تحت کی گئیں میکرواسٹیبلیٹی۔انہانسنگ اصلاحات کے جاری اثرات سے مدد مل رہی ہے، سی پیک سے پاکستان کو انفرااسٹرکچر رکاوٹوں سے نمٹنے میں مدد ملے گی تاہم مقامی سیاست اور جیوپالیٹیکل خطرات ریٹنگ کے سلسلے میں ہنوز نمایاں رکاوٹ ہیں۔ موڈیز نے کہاکہ پاکستانی حکومت کے قرضوں کا بوجھ بلند ہے جبکہ مالیاتی خسارہ نسبتاً زیادہ ہے جس کی وجہ آمدن کی محدود بنیاد ہے جس سے ترقیاتی اخراجات بھی محدود ہیں تاہم غیرملکی زرمبادلہ ذخائر اگرچہ چند برسوں کے مقابلے میں مضبوط ہیں مگر درآمدات میں کوئی بھی نمایاں اضافہ اس کے لیے خطرہ ہے، پاکستان کی بی تھری ریٹنگ کا آؤٹ لک مستحکم رکھنے کا فیصلہ مذکورہ دو طرح کے عناصر سے متعلق خطرات کو وسیع تر متوازن کرنے کی عکاسی ہے۔

موڈیز نے سیکنڈ پاکستان انٹرنیشنل سکوک کو لمیٹڈ اور تھرڈ پاکستان انٹرنیشنل سکوک کو لمیٹڈ کی فارن کرنسی سینئر ان سیکیورڈ ریٹنگز کو بھی بی تھری پر برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے، پاکستان کی Ba3 لوکل کرنسی بانڈ اور ڈپازٹ سیلنگز میں بھی کوئی تبدیلی نہیں کی گئی، B2  فارن کرنسی بانڈ سیلنگ اور Caa1  فارن کرنسی ڈپازٹ سیلنگ بھی برقرار رکھی گئی ہیں۔ موڈیز کا کہنا ہے کہ بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کے 3سالانہ ای ایف ایف پروگرام کے تحت شروع کی گئیں اصلاحات کے نتیجے میں میکرواکنامک استحکام کو تقویت ملنے اور 2015میں سی پیک پروجیکٹ شروع ہونے سے معاشی ترقی کا منظرنامہ مضبوط ہوا ہے، جون 2016 کو ختم ہونے والے مالی سال میں ریئل جی ڈی پی گروتھ 4.5 فیصد پر پہنچ گئی تھی جو مالی سال 2015 اور 2014 میں 4.1 فیصد تھی۔




Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *